Places

برگیڈیَرسردار خورشید خان کے والد انتقال کر گےَ


بارل — برگیڈیَرسردار خورشید خان کے والد آج انتقال کر گےَ- ان کی نماز جنازہ آبایَی گاوَں بارل میں ادا کی گئ۔ عوام علاقہ کی بڑی تعداد نے نماز جنازہ میں شرکت کی اور مرحوم کے لیےَ دعا کی۔۔۔


آزادحکومت کے پہلے دارالحکومت جو نجال ہل پلندری میں یوم تاسیس کے شاندار تقریب


970432_369763886485216_1662157039_nتحریر :سردار شمریزموجؔ 

آج سے 66سال قبل 24اکتوبر 1947کو موجودہ آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر میں پہلی نقلابی حکومت غازی سردار محمد ابراہیم خان بانی آزادکشمیر کی قیادت میں قائم ہوئی۔پھر اُن کی قیادت میں موجودہ خطہ بشمول گلگت بلتستان آزاد ہوا ۔اُنھوں نے پلندری سے چند کلو میٹر کے فاصلہ پر انقلابی حکومت کا دارالحکومت قائم کیا ۔جو تاریخ میں آزاد حکومت کا پہلا دارالحکومت ٹھہرا ۔ہر سال 24اکتوبر 1947ء ؁کو سرکاری طور پر یہ دن یوم تاسیس(سالگرہ) کے حوالہ سے منایا جاتا ہے ۔ضلع سدہنوتی میں ایک تقریب سرکار ی سطح پر پلندری ریسٹ ہاؤس میں منعقد ہوئی پر چم کشائی پر یڈ سلامی اور تقاریر ہوئی ہیں ۔ لیکن تاریخی مقام جو نجال ہل (سابقہ دارالحکومت )میں ایک پر و قار تقریب منعقد ہوتی ہے اس تقریب کی اہمیت افادیت کو اجاگر کرنے مین جموں و کشمیر پیپلز پارٹی کا بڑا کردار ہے گزشتہ کئی سالوں سے یہ تقریب نہایت با وقار اور احترام سے منائی جاتی ہے یہاں بڑی بڑی سیاسی سماجی مذہبی عسکری قیادتیں تشریف لا چکی ہیں جو غازی ملت سردار محمد ابراہیم خان اور دیگر اسلاف کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتی ہیں 24اکتوبر کو یہاں ایک شاندار تقریب یوم تاسیس منعقد ہوئی جس کی صدارت سابق چیف جسٹس سید منظور الحسن گیلانی نے کی جبکہ مہمان خصوصی مسلم لیگ ن کے مرکزی صدر راجہ فاروق حید ر تھے تقریب سے سردار خالد ابراہیم خان سردار خان بہادر خان، ایم ایل اے ڈاکٹر نجیب نقی خان سردار محمود اقبال مرکزی راہنما جے کے پی پی سردار فاروق ایڈووکیٹ ،سردار جاوید نثار ، محترمہ نبیلہ ارشاد ایڈووکیٹ مرکزی سیکرٹری جنرل جے کے پی پی ،سردار الطاف ،ڈاکٹر محمد کلیم ،ڈاکٹر محمد حلیم خان ،تسنیم باغی ،سردار ریاض ،عزت بیگ ،یار محمد لطیف حسرتؔ و دیگر مقررین خطاب میں شامل تھے ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے راجہ فاروق حیدر نے غاز ی ملت سردار محمد ابراہیم خان کی تاریخی خدمات کو زبر دست الفاظ میں سراہتے ہوئے کہا کہ اُنھوں نے نامساعد حالات میں ڈوگرہ راج کو للکارا 19جولائی 1947کو قرارداد الحاق پاکستان اپنے گھر میں منظور کرائی پھر 24اکتوبر 1947کو انقلابی حکومت قائم کی اور اس کی قیادت کی اور خطہ کو آزاد ی کی نعمت سے ہمکنار کیا ان کا کوئی نعم البدل نہ ہے ۔اُنھوں نے ساری زندگی ملک اور قوم کی خدمت کی ۔جو نجال ہل ایک تاریخی مقام ہے اس کی اہمیت کو اجاگر کیا جاتا رہے گا۔اُنھوں نے کہا کہ زندہ قومیں اپنے اسلاف کی قربانیوں کو فراموش نہیں کرتی اُنھوں نے کہا کہ میرے والد نے غازی ملت کا بھر پور ساتھ دیا اور تحریک آزادی کشمیر میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اُنھوں نے کہا کہ پو نچھ کے عوام کی لا زوال قربانیاں ہیں ۔ غازی ملت سردار ابراہیم نے دارالحکومت یہاں قائم کیا اور پھر مظفر آباد منتقل ہوا سردار عتیق مظفرآباد سے اسے منتقل کرنا چاہتا تھا وہ سازش ناکام ہوئی اور سردارخالد ابراہیم نے ہمارا بھر پور ساتھ دیا اُنھوں نے کہا کہ اس مقام کی تاریخی اہمیت کو مدِ نظر رکھتے ہوئے تعمیر ترقی کی جائے ۔اُنھوں نے سید منظور الحسن گیلانی کے کردار سراہے ۔سید منظور حسین گیلانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ زندہ قومو ں کے اندر جو اکابر ین پیدا ہوتے ہیں وہ قوم کو منزل کا تعین کر کے دیتے ہیں ۔سردار محمد ابراہیم خان نے نہایت مشکل اور نامساعد حالات میں قوم کی قیادت کی ۔اللہ تعالیٰ نے اُن سے جو کام لینا تھا وہ بھی اُن کی تاریخی خدمات کو تاریخ میں سنہر ی حروف میں لکھا جائے گا ۔یوم تاسیس بھر پور انداز میں بنانے کا مقصد آنے والی نسلوں تاریخ سے آگاہ کرانا ہے کہ آزادی کیا ہے ؟اُنھوں نے سیر حاصل گفتگو کی تحریک آزادی کشمیر ، پاکستان کی اسمبلی سینٹ مین موثر نمائیدگی اور دیگر معاملات پر سیر حاصل بات کی اور پو نچھ کی دھرتی کے باسیوں کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کیا ۔اور کہا کہ وقت آنے پر درست فیصلہ کیا جائے اور سچی اور خیر خواہ قیادت کو سامنے لایاجائے پونچھ غازیو،مجاہدوں شہدا کی سر زمین ہے ۔ سردار خالد ابراہیم نے تمام شرکا شکریہ ادا کیا اور 19جولائی 1947و 24اکتوبر 1947کے حوالہ سے تاریخی حوالہ جات سے شرکا کو آگاہ کیا اُنھوں سے سید منظور الحسن گیلانی ،راجہ فاروق حیدر اور دیگر تمام مقررین More


Satellite view of Pallandri Azad Kashmir



View Larger Map


Pallandri a brief introduction


Pallandri is a beautiful small town, situated in the Sudhnutti District of Azad Jamu and Kashmir (Pakistani Administrated Kashmir). According to 1998 gensus, the population of Pallandri is 2,87,000 with a growth rate of 1.99%. and total area is 569 sq KMs.

view of central jame masjid

It was liberated from Dogra Raj after few weeks of state liberation on19th July 1947 along with the other parts of state of Jamu and Kashmir . After liberation of Azad Jamu and Kashmir, leaders of freedom movement immediately announced a government setup and the capital of the sate was Junjal Hill (a village in Pallandri). Being first capital of state and the great contribution in Jihad Pallandri has a vital place in the state.


Pallandri has been part of district Poonch for many years and regained its district status in 1996. It is also knows as district Sudhnutti. Geographically it is located in the east of Pakistani capital Islamabad with a distance of only 94 kilometers. It has also an ideal location in the Azad state as it is in the center of all the districts.
Pallandri has a literacy rate of above 80% with almost 99% of school going ration among the children of age 10 and below. The women are also equally educated. There are two post graduate colleges for both men and women along with several Degree and inter colleges.


Most of the population joins the government service as a profession. The proffered profession for women is teaching and medicine however; these days there are many women who are working in banks and other government offices. A major portion is also part of Pakistan army. There are many people have served in Pak army in all ranks and still serving.


From the tourism point of view; this place has distinctive quality. It has a very moderate weather during winters and summers. The height of Pallandri city from the sea level is 4500 ft however, some of the outskirts are as high as 6500ft. It has beautiful valleys, streams and heart touching sceneries. Someone has said “this is the place where you can touch the nature” and this is very true.